Tuesday, February 27, 2024
الرئيسيةNewsاقوام متحدہ میں پاکستان کا جھوٹ بے نقاب، بھارت نے لگائی پھٹکار

اقوام متحدہ میں پاکستان کا جھوٹ بے نقاب، بھارت نے لگائی پھٹکار

نیویارک، 18 نومبر  

پاکستان ہر عالمی فورم پر مسئلہ کشمیر پر جھوٹ بولتا رہتا ہے۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بھی پاکستان نے مسئلہ کشمیر پر جھوٹ بولا تو بھارت نے اسے بے نقاب کیا اور سخت سرزنش کی۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات پر بحث ہو رہی تھی۔ اسی بحث کے دوران پاکستان کے ایک نمائندے نے جموں و کشمیر کا مسئلہ اٹھایا۔ اس پر بھارت کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔

اس معاملے پر ردعمل دیتے ہوئے اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل مشن پرتیک ماتھر نے پاکستان کی اس کوشش کو جھوٹ پھیلانے کی مایوس کن کوشش قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں دنیا کے تمام ممالک اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات پر بات کرنے کے لیے جمع ہوئے تو پاکستانی نمائندے نے پھر جموں و کشمیر کا بے معنی حوالہ اٹھایا۔ اسے بدقسمتی سے تعبیر کرتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ اور ناقابل تنسیخ حصہ ہے، قطع نظر اس کے کہ پاکستان کا نمائندہ کچھ بھی مانتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جھوٹ پھیلانے کی مایوس کن کوشش اور کثیرالجہتی فورم کا غلط استعمال کرنے کی بری عادت درحقیقت اجتماعی توہین ہے۔

اس سے قبل بھارت، برازیل، جرمنی اور جاپان پر مشتمل چار ممالک کےجی-4 گروپ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کو خبردار کیا تھا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات کو جتنا زیادہ ملتوی کیا جائے گا، اس کی نمائندگی اتنی ہی کم ہوگی۔ جی-4 کی جانب سے کہا گیا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی رکنیت میں توسیع سے ہی موجودہ تنازعات سے موثر انداز میں نمٹا جا سکتا ہے۔

اقوام متحدہ میں ہندوستان کی مستقل مندوب روچیرا کمبوج نے کہا کہ 43 سال قبل 1979 میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مساوی نمائندگی کی قرارداد کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے ایجنڈے میں شامل کیا گیا تھا۔ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ چار دہائیوں سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود اس معاملے پر کوئی ٹھوس پیش رفت نہیں ہو سکی۔

 

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments