Sunday, March 3, 2024
الرئيسيةNewsبھیما کوریگاؤں معاملے میں آنند تیل تمبڑے کو ملی ضمانت

بھیما کوریگاؤں معاملے میں آنند تیل تمبڑے کو ملی ضمانت

بھیما کوریگاؤں معاملے میں آنند تیل تمبڑے کو ملی ضمانت

این آئی اے کے احتجاج کے بعد ضمانت کے حکم پر ایک ہفتہ روک

ممبئی، 18 نومبر

بامبے ہائی کورٹ نے جمعہ کو پونے کے بھیما کوریگاو¿ں تشدد کیس کے ملزم آنند تیل تمبڑے کو ایک لاکھ روپے کے ذاتی مچلکے پر ضمانت دینے کا فیصلہ کیا۔ این آئی اے نے اس ضمانت کی سختی سے مخالفت کی، اس لیے ہائی کورٹ نے اس حکم پر ایک ہفتے کے لیے روک لگا دی۔

آنند تیل تمبڑے کے وکیل نے ہائی کورٹ میں ضمانت کی درخواست دائر کی تھی۔ اس درخواست کی سماعت جسٹس اے ایس گڈکری اور جسٹس ملند جادھو کی ڈویژن بنچ کے سامنے ہو رہی تھی۔ عرضی میں کہا گیا تھا کہ بھیما کوریگاو¿ں میں تشدد اور ایک دن پہلے پونے میں منعقدہ ایلگار پریشد کے پروگرام کے دوران آنند تیل تمبڑ موجود نہیں تھے۔ اس لیے اشتعال انگیز تقریر کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ این آئی اے کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اس معاملے میں آنند تیل تمبڑ ے کے خلاف ثبوت ملے ہیں۔ این آئی اے کو شہری نکسل ازم میں اس کے ملوث ہونے کے ثبوت بھی ملے ہیں۔ کیس کی گہرائی سے تفتیش جاری ہے، اگر ملزم کی ضمانت ہو گئی تو تفتیش متاثر ہوگی۔ اس کے باوجود ہائی کورٹ نے آنند تیل تمبڑے کو ایک لاکھ روپے کے ذاتی مچلکے پر ضمانت دینے کا حکم جاری کیا۔ اس کے بعد این آئی اے کے وکیل نے ملزم کو دی گئی ضمانت کی مخالفت کی اور کہا کہ این آئی اے اس حکم کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے جا رہی ہے۔ اس لیے اس حکم کو ایک ہفتے کے لیے روک دیا جائے۔ این آئی اے کی مانگ کو قبول کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے آنند تیل تمبڑے کی ضمانت پر ایک ہفتے کے لیے روک لگا دی ہے۔

درحقیقت، یکم جنوری 2018 کو بھیما کوریگاو¿ں میں بھیما کوریگاو¿ں جنگ کے 200 سال مکمل ہونے کی یاد میں منعقدہ ایک تقریب میں تشدد میں ایک شخص ہلاک اور 10 پولیس اہلکاروں سمیت کئی لوگ زخمی ہو گئے تھے۔ اس کے ساتھ ساتھ اربوں روپے کی املاک کا نقصان ہوا۔ اس تقریب سے ایک دن پہلے، 31 دسمبر 2017 کو، پونے میں ایلگار پریشد کی طرف سے ایک پروگرام منعقد کیا گیا تھا۔ پونے پولیس نے اس واقعہ میں 162 لوگوں کے خلاف 58 مقدمات درج کیے تھے۔ اس کے بعد ریاستی حکومت نے معاملے کی جانچ این آئی اے کو سونپ دی۔ آنند تیل تمبڑے کو اپریل 2020 میں اس معاملے میں گرفتار کیا گیا تھا۔ تب سے آنند تیل تمبڑے نوی ممبئی کی تلوجا جیل میں بند ہیں۔ خصوصی عدالت کی جانب سے ضمانت دینے سے انکار کرنے کے بعد تیل تمبڑے نے ہائی کورٹ میں ضمانت کی درخواست دائر کی تھی۔

 

 

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments