Sunday, March 3, 2024
الرئيسيةNewsپولینڈ میں میزائل، جی 7 اور نیٹو کا ہنگامی اجلاس طلب

پولینڈ میں میزائل، جی 7 اور نیٹو کا ہنگامی اجلاس طلب

وارسا/واشنگٹن، 16 نومبر (ہ س)۔ یوکرین پر روسی حملے کے نویں مہینے نے ہنگامہ برپا کر دیا ہے۔ پولینڈ میں گرنے والے دو میزائلوں کے حوالے سے اب امریکی صدر جو بائیڈن نے دعویٰ کیا ہے کہ یہ میزائل یوکرین سے داغے گئے تھے۔ اس سے قبل پولینڈ میں اچانک گرنے والے میزائل سے دو افراد کی ہلاکت کے بعد یوکرین اور پولینڈ نے روس کو اس کا ذمہ دار ٹھہرایا تھا۔

پولینڈ میں اچانک گرنے والے دو میزائلوں پر جھگڑا جاری ہے۔ امریکی صدر جو بائیڈن نے عالمی رہنماؤں کے ساتھ ہنگامی اجلاس میں روس کی جانب سے یوکرین کے شہریوں پر بمباری کو بربریت قرار دیا ہے۔ بائیڈن نے پولینڈ میں میزائل گرنے کے بعد G-7 اور نیٹو کے رکن ممالک کا ہنگامی اجلاس بلایا۔ اس ملاقات میں بائیڈن نے کہا کہ یوکرین نے روسی حملے کو روکنے کے لیے میزائل بھی فائر کیے تھے جو پولینڈ کی سرحد میں گرے۔ پولینڈ سے حملے کی تحقیقات کی حمایت کرتے ہوئے بائیڈن نے کہا کہ ہم اس وقت یوکرین کی مکمل حمایت کر رہے ہیں۔ ہم روس کو اس کے خلاف جنگ میں ہر ممکن مدد فراہم کرتے رہیں گے۔

ادھر سرحد پر کشیدگی میں اضافے کے بعد پولینڈ نے اپنی فوج کو چوکس رہنے کو کہا ہے۔ پولینڈ کی وزارت خارجہ کے ترجمان لوکاس جاسینا نے کہا کہ ہم نے روسی سفیر کو طلب کر کے واقعے کی فوری تفصیلی وضاحت طلب کی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ 15 نومبر کو یوکرین کو روسی جانب سے شدید گولہ باری کا نشانہ بنایا گیا اور فوج نے اس کا بنیادی ڈھانچہ بھی تباہ کر دیا۔ سہ پہر 3.40 پر ایک روسی ساختہ میزائل صوبہ لوبلن کے ضلع ہربیجوو کے گاؤں پرزیووڈو پر گرا اور اس کے نتیجے میں جمہوریہ پولینڈ کے دو شہری ہلاک ہوگئے۔ اسی لیے پولینڈ کے وزیر خارجہ زبگنورو نے فوری طور پر روسی سفیر کو طلب کر کے اس واقعے پر تفصیلی وضاحت طلب کی ہے۔

دوسری جانب روس نے پولینڈ پر روسی میزائل حملے کی خبروں کو ‘اشتعال انگیزی’ قرار دیا ہے۔ روس کی وزارت دفاع نے ان خبروں کی تردید کی ہے کہ روسی میزائل پولینڈ کی سرزمین پر گرے۔ اسے جنگ کی بڑھتی ہوئی صورتحال کے درمیان جان بوجھ کر اشتعال انگیزی قرار دیا گیا ہے۔ روسی وزارت دفاع نے کہا کہ روسی میزائلوں کی طرف سے یوکرین اور پولینڈ کی سرحد کو نشانہ بنانے کے لیے کوئی حملہ نہیں کیا گیا۔ دریں اثناء یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے پولینڈ کے صدر آندریج ڈوڈا سے فون پر بات کی اور پولینڈ کے شہریوں کی موت پر تعزیت کا اظہار کیا۔

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments