Monday, February 26, 2024
الرئيسيةNewsگجرات انتخابات میں کانگریس کا چہرہ ہوگاپنجا : منیش دوشی

گجرات انتخابات میں کانگریس کا چہرہ ہوگاپنجا : منیش دوشی

احمد آباد، 23 اکتوبر

گجرات اسمبلی انتخابات میں وزیر اعلیٰ کے چہرے کے طور پر کانگریس ابھی اپنے کارڈ نہیں کھولے گی۔ وہ صرف انتخابی نشان پنجے کو اپنا چہرہ بنا کر الیکشن لڑے گی۔ بی جے پی موجودہ وزیر اعلی بھوپیندر پٹیل کے چہرے کو سامنے رکھ کر الیکشن لڑ رہی ہے۔ کانگریس نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے ساتھ سیٹ شیئرنگ میں بھی قدم اٹھا رہی ہے۔

اس سلسلے میں کانگریس کے ریاستی ترجمان منیش دوشی کا کہنا ہے کہ کانگریس کا پنجاپارٹی کا چہرہ ہے۔ بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے لیے وزیر اعلیٰ کا چہرہ بتانا ان کی مجبوری ہے۔ اچانک پوری حکومت بدلنے کا کیا مطلب؟ مجرم نے کہا کہ بھوپیندر پٹیل کا نام مجبوری سے کھیلا جا رہا ہے۔ کانگریس قانون ساز پارٹی کے نام کا انتخاب جمہوری طریقہ سے انتخابی نتائج کے بعد ہی کرے گی۔

گجرات میں ریاستی صدر کے عہدے سے لے کر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تک کانگریس نے ذات پات کی مساوات کو سلجھانے کی کوشش کی ہے۔ ریاستی صدر جگدیش ٹھاکر پسماندہ ذات سے تعلق رکھتے ہیں، سکھرام راٹھوا قبائلی سماج سے ہیں۔ ان دونوں کی گجرات میں بڑی آبادی ہے۔ اس کے بعد بھی پارٹی وزیر اعلیٰ کے ممکنہ چہرے کے بارے میں خاموش ہے۔ ماہرین کی مانیں تو وزیر اعلیٰ کے چہرے کو لے کر کانگریس کے اندر کئی رائے ہیں۔ جس کی وجہ سے وہ الیکشن سے پہلے اپنے پتے نہیں کھولنا چاہتی۔ جہاں بی جے پی پاٹیدار برادری کے بھوپیندر پٹیل کو آگے بڑھا کر الیکشن لڑ رہی ہے وہیں کانگریس اور عام آدمی پارٹی فی الحال کسی بھی نام کو آگے بڑھانے پر خاموش ہیں۔

اسپیکر اور قائد حزب اختلاف 25 تاریخ کو دہلی جائیں گے

دیوالی کے بعد 25 اکتوبر کو کانگریس کے ریاستی صدر جگدیش ٹھاکر اور اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سکھرام راٹھوا دہلی جائیں گے۔ انچارج رگھو شرما بھی 25 اکتوبر کو دہلی پہنچیں گے۔ یہ سبھی گجرات اسمبلی انتخابات کے لیے امیدواروں کے انتخاب کے لیے اسکریننگ کمیٹی اور سی ای سی کی میٹنگ میں حصہ لیں گے۔ راہل گاندھی اور پرینکا گاندھی کے پروگرام بھی دہلی کے دورے کے دوران ہی طے کیے جا سکتے ہیں۔ راہل اور پرینکا گاندھی کے گجرات میں کانگریس کی تبدیلی سنکلپ یاترا میں شامل ہونے کا امکان ہے۔ دیوالی کے بعد کانگریس جارحانہ انداز میں انتخابی مہم میں اترے گی۔

سب سے پہلے غیر متنازعہ نشستوں پر امیدواروں کا اعلان کیا جائے گا۔

گجرات انتخابات کے لیے کانگریس امیدواروں کے انتخاب کا عمل آخری مرحلے میں ہے۔ کانگریس الیکشن کمیٹی کی میٹنگ 26-27 اکتوبر کو ہوگی۔ سی ای سی اسکریننگ کمیٹی کے منتخب کردہ ناموں پر مہر ثبت کرے گا۔ توقع ہے کہ کانگریس پہلے اپنے واحد دعویدار اور غیر متنازعہ نشستوں کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کرے گی۔ اس کے علاوہ کئی سیٹوں پر امیدوار سامنے آنے کے بعد بی جے پی اپنے امیدواروں کا اعلان کر سکتی ہے۔

کانگریس نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے ساتھ اتحاد کے بارے میں سوچ سمجھ کر قدم اٹھائے گی۔ راجیہ سبھا انتخابات میں این سی پی کے قابل اعتراض کردار پر پارٹی کے مقامی کارکن ناراض ہیں۔ اس کی وجہ سے یہ مانا جا رہا ہے کہ اعلیٰ قیادت کم از کم سیٹوں پر این سی پی کے ساتھ شراکت داری کرے گی۔ راجیہ سبھا انتخابات میں این سی پی کے رویے سے گجرات پردیش کانگریس کارکنان کو دکھ ہوا ہے، لیکن اعلیٰ قیادت جو بھی فیصلہ کرے گی، وہ وہاں درست ہوگا۔

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments