Saturday, March 2, 2024
الرئيسيةNewsاس سال دنیا بھر میں 67 صحافی تشدد کا نشانہ بنے

اس سال دنیا بھر میں 67 صحافی تشدد کا نشانہ بنے

برسلز (بیلجیم)، 10 دسمبر

۔ انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلسٹس (آئی ایف جے ) کی تازہ رپورٹ نے دنیا بھر کے صحافیوں کی تشویش میں اضافہ کر دیا ہے۔ آئی ایف جے کی اس رپورٹ کے مطابق اس سال دنیا بھر میں اب تک 67 صحافی اور میڈیا پرسنز مارے جا چکے ہیں۔ گزشتہ سال یہ تعداد 47 تھی۔

اس رپورٹ کے مطابق یوکرین -روس جنگ، ہیتی میں عدم استحکام اور میکسیکو میں جرائم پیشہ گروہوں کے بڑھتے ہوئے تشدد نے 2022 میں کئی صحافیوں کی جان لی۔ دہشت گردی کے تشدد کا نشانہ بننے والے صحافیوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔

فیڈریشن نے رپورٹ میں کہا ہے کہ میڈیا والوں پر دباو ڈالنے کے لیے انہیں جیلوں میں ڈالا جا رہا ہے، صحافیوں پر مظالم کے سب سے زیادہ واقعات چین سمیت ہانگ کانگ، میانمار اور ترکی میں دیکھے گئے۔ گزشتہ سال کی رپورٹ میں 365 صحافیوں کو سلاخوں کے پیچھے ڈال دیا گیا تھا۔

صحافیوں کی تنظیم نے کہا کہ یوکرین میں جنگ کی کوریج کرنے والے میڈیا ورکرز اس سال کسی بھی دوسرے ملک کے مقابلے میں زیادہ مارے گئے ہیں۔ زیادہ تر یوکرینی صحافیوں کی موت ہوئی ہے۔ ان میں امریکی دستاویزی فلم ساز برینٹ ریناوڈ بھی شامل ہیں۔

آئی ایف جے اور میڈیا کے حقوق کے دیگر گروپوں نے مختلف ممالک کی حکومتوں سے صحافیوں اور آزاد صحافت کے تحفظ کے لیے مزید ٹھوس اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments