Tuesday, February 27, 2024
الرئيسيةNewsوزیراعظم کا تبصرہ 'آج کا دور جنگ کا نہیں ہے'جی-2 اعلامیہ...

وزیراعظم کا تبصرہ ‘آج کا دور جنگ کا نہیں ہے’جی-2 اعلامیہ میں شامل

واشنگٹن،19 نومبر

۔ وائٹ ہاؤس نے جمعہ کو (مقامی وقت کے مطابق) یوکرین-روس تنازعہ کے پس منظر میں روس کے صدر ولادیمیر پوتن کے لئے کئے گئے ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کے تبصرے ’’آج کا دور جنگ کا نہیں ہے‘‘ کو جی-20 سربراہی اجلاس کے مشترکہ اعلامیہ میں جوڑنے کی جم کر تعریف کی۔ وائٹ ہاؤس نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کا کردار اہم ہے۔ قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم کا یہ پیغام انڈونیشیا کے بالی میں جی-20 کے مشترکہ اعلامیہ کے اختتام کا ایک اہم حصہ بن گیا ہے۔

وائٹ ہاؤس کی پریس سکریٹری کارائن جین پیئر نے بریفنگ میں بتایا کہ امریکہ کو یقین ہے کہ جی-20 سربراہی اجلاس کامیاب رہا۔ پیئر نے سربراہی اجلاس کی کامیابی میں صدر جو بائیڈن، بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی اور انڈونیشیا کے صدر جوکو وڈوڈو کے کردار کو اہم بتایا۔

پیئر نے کہا- ‘ہم نے جی-20 سربراہی اجلاس کو کامیاب بنایا۔ صدر بائیڈن نے مودی اور انڈونیشیا کے صدر سے بات کی۔ بھارت نے سربراہی اجلاس کے اعلامیے پر بات چیت میں کلیدی کردار ادا کیا۔ مودی نے واضح کیا کہ آج کا دور جنگ کا نہیں ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیر اعظم مودی نے بھی یوکرین روس تنازعہ کے پس منظر میں اس سال ستمبر میں سمرقند میں شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس کے موقع پر دو طرفہ ملاقات میں پوتن سے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ‘آج کا دور جنگ کا نہیں ہے۔

وائٹ ہاؤس کے پریس سکریٹری پیئر نے بھی خوراک اور توانائی کے تحفظ کے چیلنجوں سے نمٹنے میں مودی کے کردار کی تعریف کی اور ہندوستان کی جی- 20 صدارت کے لیے امریکی حمایت کا اعادہ کیا۔ جین پیئر نے کہا- ‘ہم نے خوراک اور توانائی کے تحفظ کے موجودہ چیلنجز اور ایک لچکدار عالمی معیشت کی تعمیر کی کوششوں کو سنجیدگی سے لیا ہے۔ ہم اگلے سال ہندوستان کی جی-20 صدارت کی حمایت کے لئے تیار ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ بالی جی -20 سربراہی اجلاس کے بعد اب تمام نظریں ہندوستان پر لگی ہوئی ہیں۔ اگلے سال، نئی دہلی گلوبل ساؤتھ کے دونوں ممالک اور ترقی یافتہ ممالک کے درمیان بہتر تعاون کے لیے ماحول پیدا کرنے کو اپنے ایجنڈے میں شامل کرے گا۔ ایجنڈا ممکنہ طور پر مشترکہ عالمی امن اور خوشحالی کے لیے پائیدار اور مساوی ترقی کے لیے تعاون اور ابھرتے ہوئے عالمی چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے صلاحیتوں میں اضافہ ہوگا۔

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments