Saturday, March 2, 2024
الرئيسيةUncategorizedبرکینا فاسو میں دو دہشت گردانہ حملوں میں آٹھ فوجی اہلکاروں سمیت...

برکینا فاسو میں دو دہشت گردانہ حملوں میں آٹھ فوجی اہلکاروں سمیت 14 افراد ہلاک

اوگاڈوگو، 23 نومبر

۔ مغربی افریقی ملک برکینا فاسو میں دہشت گرد گروہوں نے دو زور دار حملے کیے ہیں۔ ان حملوں میں آٹھ فوجی اہلکاروں سمیت چودہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ کئی لوگ زخمی بھی ہوئے ہیں جن کا علاج جاری ہے۔

مغربی افریقی ملک برکینا فاسو کا شمار دنیا کے غریب ترین ممالک میں ہوتا ہے۔ برکینا فاسو کی سرحدیں مالی، نائجر، بینن، ٹوگو، گھانا اور کوٹ ڈی آئیوری سے ملتی ہیں۔ فوج کو یہاں بھی بالادستی حاصل ہے۔ غیر مطمئن فوجی افسران نے اس سال یہاں دو بغاوتیں کی ہیں۔ ملک 2015 سے دہشت گردی کے حملوں کا شکار ہے۔ اس دوران یہاں پر دہشت گردانہ حملوں میں ہزاروں شہری اور سیکورٹی فورس کے اہلکار ہلاک ہو چکے ہیں۔ صورتحال یہ ہے کہ ملک سے 20 لاکھ سے زائد لوگ نقل مکانی کر چکے ہیں۔

اب ایک بار پھر برکینا فاسو دہشت گردانہ حملوں سے لرز اٹھا ہے۔ لگاتار دو حملوں میں سے پہلا حملہ صبح سویرے صافی گاؤں پر ہوا۔ یہاں مسلح افراد نے حملہ کیا۔ اس حملے میں آٹھ افراد مارے گئے۔ دہشت گردوں نے یہاں آتشزنی بھی کی۔ دوسرا حملہ مارکوئے علاقے کے قریب ہوا۔ اس حملے میں چھ افراد مارے گئے۔ حملوں میں متعدد افراد زخمی ہوئے، جنہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ مارکوئی کے علاقے میں ہلاک ہونے والوں میں سے ایک کے رشتہ دار نے بتایا کہ دہشت گردوں نے سالموسی-مارکوئی روڈ پر تین افراد کو اغوا کیا۔ تینوں بعد میں مردہ پائے گئے۔ دہشت گردوں نے کئی دیگر افراد کو اغوا کر کے اپنی گاڑی میں بٹھا لیا ہے۔

RELATED ARTICLES

ترك الرد

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا

Most Popular

Recent Comments